The way you access our dictionary content is changing.

As part of the evolution of the Oxford Global Languages (OGL) programme, we are now focussing on making our data available for digital applications, which enables a greater reach in delivering and embedding our language data in the daily lives of people and providing more immediate access and better representation for them and their language.

Because of this, we have made the decision to close our dictionary websites.
Our Oxford Urdu living dictionary site closed on 31st March 2020, and this forum closed with it.

We would like to warmly thank everyone for your participation and support throughout these years – we hope that this forum, and the dictionary site, have been useful
You were instrumental in making the Oxford Global Languages initiative a success!

Find out more about what the future holds for OGL:
https://languages.oup.com/oxford-global-languages/

تبصرے

  • چوہان صاحب، آپ کی علم کے حصول کے لیے جستجو قابلِ داد ہے۔ میں نے جن لغات کا ذکر کیا وہ ساری آن لائن موجودع ہیں، خاص طور پر یونیورسٹی آف شکاگو کی کرم نوازی کی وجہ سے کہ انہوں نے یہ انمول ذخیرہ فراہم کر رکھا ہے۔ آپ اس لنک سے متعدد نادر و نایاب لعات …

    میں دوشیزہ Zafar کی طرف سے تبصرہ February 2020
  • چوہان صاحب، آپ نے بڑی سالڈ لسٹ پروائیڈ کر دی ہے۔ تھینکس اے بنچ!۔

    واقعی آپ درست فرما رہے ہیں، یہ معاملہ بہت گمبھیر شکل اختیار کر گیا ہے۔ ذرا سوچیے کہ اس دور میں اگر مرزا غالب یا 19ویں صدی کا کوئی دوسرا اردو دان آ جائے تو کسی پڑھے لکھے شخص …

    میں اردو کے مٹتے الفاظ Zafar کی طرف سے تبصرہ February 2020
  • عدنان صاحب، مجھے آپ کی بات سے اصولی طور پر مکمل اتفاق ہے۔ لیکن دوسری طرف آپ دیکھیے کہ انگریزی کا مستعمل کورٹی کی بورڈ تمام تر خامیوں کے باوجود آج بھی دنیا بھر میں رائج ہیں، حالانکہ ماہرین ایک عرصے سے متفق ہیں کہ یہ کی بورڈ ٹائپنگ کی رفتار کو سست …

  • چوہان صاحب، جیسا کہ میں نے پہلے عرض کیا، اس سلسلے میں کسی لغت کا حوالہ زیادہ کارآمد ہو گا۔ فارسی کی مشہور لغات میں دہخدات سٹائنگاس اور حیم وغیرہ شامل ہیں۔ ان میں دیکھ لیجیے۔ عین ممکن ہے کہ آپ کی سعی نامسعود ثابت نہ ہو۔

    میں دوشیزہ Zafar کی طرف سے تبصرہ February 2020
  • عدنان صاحب، کی بورڈ کا مسئلہ تو بہت ٹیڑھا ہے۔ مشکل یہ ہے کہ لوگ انگریزی کی بورڈ کے راستے اردو کی طرف آتے ہیں، اس لیے وہ چاہتے ہیں کہ جو انہوں نے انگریزی کی بورڈ کے استعمال میں مہارت حاصل کی ہے اسی کو اردو پر بھی لاگو کر دیں، اس لیے وہ کوئی نیا کی…

  • چوہان صاحب، حوالہ کسی مستند لغت کا یا ایسے ہی کسی اور ماخذ کا دیا جاتا ہے جس پر سب نہیں تو اکثر لوگوں کو اتفاق ہو۔ جو ویب سائٹ آپ نے بطور ریفرنس پیش کی ہے، معذرت کے ساتھ عرض ہے کہ اس کی کوئی حیثیت نہیں۔

    میں دوشیزہ Zafar کی طرف سے تبصرہ February 2020
  • جیسا کہ اوپر عرض کیا گیا، لفظ گھاٹن منٹو نے ایجاد نہیں کیا، وہ پہلے سے مارکیٹ میں پہاڑی عورتوں کے لیے موجود تھا۔ منٹو نے اسے صرف افسانے میں استعمال کیا ہے، اس لیے یہ نہیں کہا جا سکتا کہ منٹو نے اس لفظ کو کوئی نئے معنی عطا کیے ہیں۔

    میں گھاٹن Zafar کی طرف سے تبصرہ February 2020
  • چوہان صاحب، اپنی تحقیق یہاں پیش کرنے کا شکریہ۔ اگر وضاحت کر سکیں کہ شیزہ بمعنی نور کا حوالہ کیا ہے تو عنایت ہو گی۔

    میں دوشیزہ Zafar کی طرف سے تبصرہ January 2020
  • اردو والوں نے شروع شروع میں چند فارسی مصادر کو اردوانے کی کوشش کی تھی، لیکن وہ الفاظ ایک ہاتھ کی انگلیوں پر ہی ختم ہو گئے۔ فرمودن سے فرمانا، بخشیدن سے بخشنا/بخشوانا، شرمیدن سے شرمانا، قوم سے قومیانا (آخر الذکر نسبتا جدید مثال ہے) اور شاید دو تین …

  • عدنان صاحب، کیا جائے، اسی سوال کا جواب یہ فورم ، یہ ویب سائٹ اور اس کا متعلقہ فیس بک صفحہ ہیں۔ یہاں ہم آپ جیسے اردو کے چاہنے والوں کے ساتھ مل کر کوشش کر تو رہے ہیں کہ کچھ نہ کچھ کیا جائے۔

    آپ کو یہ جان کر یقیناً مسرت ہو گی کہ اوکسفرڈ اردو …

  • عدنان عمر صاحب، مجھے خوشی ہے کہ آپ کو عسکری صاحب کا مضمون پسند آیا۔ وہ چونکہ عام عوام کے لیے لکھا گیا تھا نہ کہ ماہرینِ لسانیات کے لیے، اس لیے اس میں دلچسپی کا پہلو برقرار رکھنا ضروری تھی۔ ویسے بھی عسکری صاحب خود ماہرِ لسانیات نہیں تھے، البتہ انہ…

  • اس لیے کہ یہ صدیوں سے اردو میں استعمال ہوتا چلا آیا ہے اور لاکھوں لوگ اسے روزانہ تحریر اور گفتگو میں استعمال کرتے ہیں۔

    میں کا اور میں کا استعمال Zafar کی طرف سے تبصرہ January 2020
  • دوست سے پتہ کرنے کی ضرورت پیش نہیں آئی۔ مجھے ان کے مضمون کا لنک مل گیا ہے جس میں بقول ان کے 4100 سے زیادہ یک لفظی اردو افعال موجود ہیں۔ ان کے بلاگ کا پتہ یہ ہے

    h…

  • جناب، آپ اس کتاب کے صحفہ 276 پر محمد حسن عسکری کا مضمون قحط الافعال پڑھ سکتے ہیں:

    https://www.rekhta.org/ebooks/majmu…

  • عدنان عمر صاحب، آپ کا سوال بہت اہم ہے۔ یہ مسئلہ سب سے پہلے محمد حسن عسکری نے غالباً 50 کی دہائی میں ایک مضمون ’قحط الافعال‘ میں اٹھایا تھا، لیکن اس کے بعد سے اس پر زیادہ بات نہیں ہوئی۔

    جہاں تک میرا خیال ہے اردو میں بہت سے افعال موجود ہیں،…

  • امان صاحب، آپ کا سوال سمجھ میں نہیں آ سکا۔ کیا آپ ان دونوں لفظوں کا مطلب پوچھنا چاہتے ہیں یا ان کا تلفظ؟ ازراہِ کرم تھوڑی وضاحت کر دیجیے۔

    میں دے اور دیں Zafar کی طرف سے تبصرہ December 2019
  • امان اللہ خان صاحب، بہت شکریہ کہ آپ نے اپنے خیالات یہاں پیش کیے۔ کچھ ایسی ہی باتیں اوپر بھی لکھی جا چکی ہیں، اور اگر آپ دوسری تمام پوسٹوں کا جائزہ لیں تو بہت سی نئی باتوں کا پتہ چلے گا۔ ایک بات واضح کر دوں کہ تحقیق کے میدان میں حوالہ یا ریفرنس کی…

    میں لفظ ’پٹھان‘ کا ماخذ Zafar کی طرف سے تبصرہ December 2019
  • شاہین صاحب، خر کے استعمال کی اضافی مثالوں کی ”خر” فہرست پیش کرنے کا شکریہ :) خرمن کے بارے میں آپ کا قیاس درست معلوم ہوتا ہے۔ سٹائنگاس میں…

    میں خربوزہ Zafar کی طرف سے تبصرہ October 2019
  • جناب احمد سجاد صاحب

    بہت شکریہ کہ آپ نے حوالہ فراہم کر دیا۔ اردو لغت تاریخی اصول پر میں درج ہے

    . بڑا، جیسے : خرگاہ، خرمہرہ، خرگوش وغیرہ (مرکبات میں).

    وہاں تھے بی خرگہ کوں لیائے سب سپاہ
    لیا ڈلرے دئیے شیر لشکر پناہ

    میں خربوزہ Zafar کی طرف سے تبصرہ October 2019
  • جنابِ والا، یہی بات محمد حسین آزاد نے سخندانِ فارس میں بھی لکھی ہے (البتہ انہوں نے بزہ کے معنی خوشبودار نہیں بلکہ پھل دیے ہیں) اور بڑا پھل والی بات واقعی جی کو لگتی بھی ہے، مگر مسئلہ یہ ہے کہ مجھے ابھی تک کسی لغت میں، بشمول دہخدا، خر بمعنی بڑا نہ…

    میں خربوزہ Zafar کی طرف سے تبصرہ September 2019
  • بہت شکریہ قاضی صاحب، یہ اطلاع بہت خوش کن ہے کہ بلوچی میں قدیم فارسی گاف برقرار ہے۔ میں نے کہیں پڑھا تھا کہ قدیم فارسی میں گ اور ہائے مختفی ہ کی املا ایک جیسی تھی یا ملتی جلتی تھی، اس لیے شروع شروع میں زندگ/بندگ وغیرہ عربی رسم الخط میں غلط ٹرانسکر…

    میں قندہار Zafar کی طرف سے تبصرہ September 2019
  • آپ درست فرماتے ہیں، عین ممکن ہے یہاں توبہ پہاڑی کے معنی دے رہا ہو، لیکن اگر ایسا ہے تو پھر ہمیں پنجابی لفظ ٹوبہ (المعروف ٹوبہ ٹیک سنگھ) پر بھی غور کرنا پڑے گا، لیکن ٹوبہ کا مطلب پہاڑی سے الٹ ہے، یعنی کنواں یا کھائی۔

    میں گول توند والا ٹیلہ Zafar کی طرف سے تبصرہ August 2019
  • یہ پوسٹ لکھ بیٹھا تو چند دن بعد یونہی محمد حسین آزاد کی کتاب سخندانِ فارس اٹھا لی۔ اس کتاب کا موضوع فارسی زبان ہے اور اس میں آزاد فارسی زبان کے الفاظ کے اشتقاق پر عمدہ بحث کرتے ہیں اور وہ بھی اپنے دلفریب انداز میں۔

    یہ بےحد دلچسپ کتاب آزاد…

    میں خربوزہ Zafar کی طرف سے تبصرہ August 2019
  • آپ نے بہت مدلل نکات پیش کیے ہیں جن سے انکار ممکن نہیں ہے۔ مزید یہ کہ عربی والے تو ط ت کے چکر میں نہیں پڑتے، اور دوسری زبانوں سے الفاظ لیتے وقت بلاتکلف ط استعمال کر لیتے ہیں، بریطانیا اس کی ایک مثال ہے۔ اس کے علاوہ ارسطو، افلاطون وغیرہ بھی سامنے ک…

    میں طوتا یا توتا؟ Zafar کی طرف سے تبصرہ August 2019
  • سرفراز صاحب، ہرن کے تینوں تلفظ درست ہیں:

    harin, haran, hiran

    میں تلفظ Zafar کی طرف سے تبصرہ June 2019
  • جناب، نا تاکیدی لفظ ہے، اس سے معنی تبدیل نہیں ہوتے بلکہ ان میں زور پیدا ہو جاتا ہے۔ نفی کے معنی میں نہ آتا ہے، جس سے معنی الٹ ہو جاتے ہیں۔ آپ نے جو مثال پیش کی ہے، اس میں میرا اس سے تعارف نا ہے۔ اس میں نا نفی کے معنی میں آیا ہے، اس لیے اسے ہ سے ل…

    میں صرف و نحو مرکز Zafar کی طرف سے تبصرہ May 2019
  • احساسِ کمتری کہنا تو غالباً درست نہ ہو گا۔ احساسِ برتری البتہ ہو سکتا ہے کیوں کہ وہ اپنی تہذیب کو ہر تہذیب سے برتر گردانتے تھے اس لیے ضرورت ہی محسوس نہیں کی کہ کسی اور سے استفادہ کیا جائے۔ اردو کے قدیم اساتذہ میں سے گنتی ہی کے ہوں گے جنہوں نے دیو…

  • شاہد صاحب آپ نے بہت عمدہ نکات اٹھائے ہیں اور اس معاملے کے تمام پہلوؤں کا احاطہ کیا ہے۔ یقینا یہ بدقسمتی ہے کہ اردو قواعد نگاروں نے مخلوط آوازوں کو الگ حرف ظاہر نہ کر کے عجیب کھچڑی پکا دی ہے جو اب تک ابل رہی ہے۔

    مزید حیرت کی بات یہ ہے کہ د…

  • قنات تو گھیرتی ہے لیکن صرف قنات کو گھیرنے کے معنی میں استعمال نہیں کیا جا سکتا۔ البتہ قنات کا ایک مطلب کاریز یعنی زیر زمین نالی بھی ہے۔

    قاضی صاحب نے صلاح دی ہے کہ شاید وہ شخص جس کی رگ رگ میں سفلہ پن دوڑ رہا ہو۔

    اس کے امکانات موجود…

    میں چپڑقناتیہ Zafar کی طرف سے تبصرہ April 2019
  • بہت دلچسپ۔ کندہ کو خندگ بڑی آسانی سے سمجھا جا سکتا ہے کیوں کہ قدیم اور وسطی فارسی میں ہائے مختفی پر ختم ہونے والی کئی الفاظ میں ہ کی جگہ گ آتا تھا۔ مثال کے طور بندہ دراصل بندگ تھا، زندہ زندگ اور بچہ بچگ تھا۔ بعد میں تلفظ بدل گیا اور گ حذف ہو کر ز…

    میں قندہار Zafar کی طرف سے تبصرہ April 2019