The way you access our dictionary content is changing.

As part of the evolution of the Oxford Global Languages (OGL) programme, we are now focussing on making our data available for digital applications, which enables a greater reach in delivering and embedding our language data in the daily lives of people and providing more immediate access and better representation for them and their language.

Because of this, we have made the decision to close our dictionary websites.
Our Oxford Urdu living dictionary site closed on 31st March 2020, and this forum closed with it.

We would like to warmly thank everyone for your participation and support throughout these years – we hope that this forum, and the dictionary site, have been useful
You were instrumental in making the Oxford Global Languages initiative a success!

Find out more about what the future holds for OGL:
https://languages.oup.com/oxford-global-languages/

نقارے خانے میں طوطی؟

یہ محاورہ بہت عام ہے اور اس موقعے پر بولا جاتا ہے جب کسی کی شنوائی نہ ہو رہی ہو۔ بہت سے لوگ طوطی کو طوطے کی مادہ سمجھتے ہیں، لیکن حقیقت یہ ہے کہ طوطی دراصل ایک قسم کا ساز ہے۔

اردو لغات کی کم مائیگی دیکھیے کہ اس ساز کی تفصیل نہیں دیتے۔ اردو لغت تاریخی اصول پر کے بحرِ زخار میں فقط اتنا لکھا ہے

گاڑی کا ہارن، بھونپو

البتہ فارسی کی لغات کھنگالنے سے پتہ چلتا ہے کہ یہ بانسری کی ایک قسم ہے جسے انگریزی میں
flageolet
کہتے ہیں۔

یہ ساز لکڑی کا بنا ہوتا ہے جس میں چار سوراخ ہوتے ہیں، دو شروع میں اور دو آخر میں اور اس کے ایک سرے میں پھونک مار کر اسے بجایا جاتا ہے۔ یہ ساز مغربی آکسٹرا میں سنائی دیتا ہے اور نہایت سریلا ہوتا ہے، لیکن جب آکسٹرا کے بھاری ساز ایک ساتھ بجنا شروع ہو جائیں تو اس ساز کا بھی وہی حال ہوتا ہے جو نقارے خانے میں طوطی کا!!!۔

سائن ان یا رجسٹر تبصرہ کرنے کے لئے۔