پگڑی، گرجا، چھکے چھوٹنا

July 2016 کو ترمیم کیا میں یہ لفظ کہاں سے آیا؟

اس لڑی میں اردو الفاظ کے اشتقاق پر بات کی جائے گی اور یہ دیکھا جائے گا کہ یہ لفظ کن مراحل سے گزر کر اس شکل تک پہنچا ہے۔

«1

تبصرے

  • کچھ عرصہ پہلے ایک ٹی وی پروگرام کے بزرجمہر نما اینکر صاحب نے فتویٰ صادر کیا کہ پگڑی لفظ غلط ہے
    کیونکہ اصل لفظ پگ + کڑی ہے، اور اس کا مطلب پاؤں میں پہننے والا زیور یعنی پازیب ہے نہ کہ سر پر پہنے جانے والا کپڑا۔ موصوف اس بات کو یکسر نظر انداز کر گئے کہ اگر ایسا ہی ہے تو پھر لفظ پگڑ کہاں سے آیا جو بڑی پگڑی کو کہتے ہیں اور پگڑی اس کی تصغیر ہے۔ مزید یہ کہ لفظ پگ کا مطلب بھی پگڑی ہے جو پنجابی میں بھی عام استعمال ہوتا ہے۔ کیا کہتے ہیں ارباب اس بارے میں؟

  • پگڑی لفظ پگڑ سے بنا ۔۔ پکڑی یعنی چھوٹی پگڑ ۔۔ پراکرت میں پَگ ہے۔ پَگ کا مطلب پاؤں تو ہے لیکن موٹی رسی کو بھی پَگ کہتے ہیں۔۔ مختلف اقوام میں سر پر رسی لپیٹنے کا رواج ملتا ہے۔۔ اس موٹی رسی کی جگہ بعد میں کپڑے نے لے لی۔۔ اسی پَگ سے پگڑی بنی ۔۔۔۔

  • ویسے یہ جو ٹی وی پروگرام کے بزرجمہر نما اینکر صاحب ہیں وہ اکثر و بیشتر اس قسم کی بکواس فرماتے رہتے ہیں ۔۔۔

  • شاہد صاحب, لفظ کےمنبع کے بارے میں آپ کی وضاحت پڑھ کر مزہ آگیا. شکریہ
  • ظفر صاحب آپ نے یہ اچھی لڑی شروع کی ہے. خدا کرے احباب دلچسپی لیں.
  • ایک اور لفظ گرجا ہے۔ اس کے بارے میں کہا گیا ہے کہ یہ مسلمانوں کی بددعا سے بنا ہے جو وہ چرچ دیکھ کر کہتے تھے، گر جا، گر جا۔ کیا کہتے ہیں احباب بیچ اس معاملے کے؟

  • ارشد بھائی نوازش کرم شکریہ مہربانی

  • ظفر بھائی آپ میری پگڑی والی تھوری سےمتفق ہیں کہ نہیں

  • اردو مختلف زبانوں کا گل دستہ ہائے رنگ برنگ ہے۔۔ پرتگیزی زبان کے بہت سارے لفظ اردو کا حصہ بن گئے ہیں۔۔ گرجا بھی پرتگیزی زبان سے اردو میں آیا ہے۔۔۔

  • شاہد صاحب، آپ کی پگڑی والی بات بالکل درست ہے۔ برصغیر کی مختلف زبانوں میں پگ، پاگ، پگڑ، پگڑی وغیرہ بولے جاتے ہیں، جن میں سندھی، پنجابی، گجراتی، کشمیری، پہاڑی، لہندا، وغیرہ شامل ہیں۔ قیاس کہتا ہے کہ اس لفظ کا ماخذ سنسکرت کا پگ ہو سکتا ہے۔ موٹی رسی والی بات البتہ میرے لیے نئی ہے۔

  • شکریہ نوازش حضور۔۔

  • چھکے چھوٹنا

    اس کا مطلب لغات میں بوکھلا جانا یا سٹپٹا جانا بتایا گیا ہے۔ لیکن اس کا چھ کے ہندسے کے ساتھ کیا تعلق ہے؟ کہیں ایسا تو نہیں کہ اس لفظ کا ماخذ کوئی اور ہو؟

  • حضرتِ پلیٹس نے فرمایا ہے کہ چھکے چھوٹنا سے مراد ہے چھ حواس خطا ہو جانا، لیکن بات کچھ دل کو ٹھکی نہیں، کیونکہ حواس تو پانچ ہوتے ہیں، چھٹی حس تو کچھ اور ہی چیز ہے۔

  • سر، ممکن ہے مطلب یہ ہو کہ جب پانچ حواس کے ساتھ چھٹی حس کی بیٹری بھی ڈائون ہو جائے تو اسے چھکے چھوٹ جانا کہتے ہوں۔ یعنی بہت زیادہ حواس باختہ ہونا۔

  • July 2016 کو ترمیم کیا

    السلام علیکم

  • وعلیکم السلام

  • خوش آمدید شاکر صاحب، آے آمدنت تو باعثِ خوشنودیِ ما

  • کیا جوا کھیلنے والے پانسے کو بھی چھکا کہتے ہیں ؟

  • جی تاج دین صاحب، جوا اور لوڈو کھیلنے والے پانسے کو بھی چھکا کہتے ہیں کیوں کہ اس کے چھ اطراف ہوتے ہیں۔

  • سہیل بخاری صاحب نے اپنی کتاب لسانی مقالات میں لکھا ہے کہ چھکے کا ایک مطلب پسینہ بھی ہے۔ گویا چھکے چھوٹ جانا کا مطلب ہے پسینے چھوٹ جانا۔

    گویا اب ہمارے پاس چھکے چھوٹنے کے تین ماخذ آ گئے:

    ا۔ حواس کھو بیٹھنا
    ب۔ جوا کھیلتے وقت پانسے ہاتھ سے گر جانا
    ج۔ پسینے چھوٹ جانا

    دوستوں کا کیا خیال ہے، ان کا ووٹ کس ماخذ کی طرف ہے؟

  • پَگْڑِی {پَگ + ڑی} (سنسکرت)

    پَگ، پَگْڑِی

    سنسکرت زبان سے "پراک" سے مؤرد لفظ پگ ہے جس کی تصغیر ہے 1565ء میں "جواہر اسراراللہ" میں مستعمل ہے۔

    اسم مصغر (مؤنث - واحد)

    جمع: پَگْڑِیاں {پَگ + ڑِیاں}

    جمع غیر ندائی: پَگْڑِیوں {پَگ + ڑِیوں (و مجہول)}

    مآخذ اردو انسائکلو پیڈیا

  • مولوی نورالحسن نیئر نے پگڑی کو ہندی کا لفظ لکھا ہے نوراللغات میں

  • July 2016 کو ترمیم کیا

    چھکے چھوٹنا کے متعلق ڈاکٹر عشرت جہاں ہاشمی نے "اردو محاورات کا تہذیبی مطالعہ" میں لکھا ہے کہ

    ۔۔۔"چھکّا آج بھی کرکٹ کے رشتہ سے ہمارے لئے ایک خاص لفظ ہے اِس سے پہلے چھکّے چھُوٹ جانا استعمال ہوتا تھا۔ جس کے معنی ہوتے تھے کہ اُس کے پانچوں حواس اور چھٹی حِس غائب ہو گئی اوسان خطا ہو گئے ہوش حواس گم ہو گئے۔ یہ ایسے وقت کے لئے کہتے ہیں جب کسی ناقابلِ برداشت صورت حال سے آدمی دوچار ہوتا ہے۔ اور کچھ سوچ نہیں پاتا کہ وہ کیا کرے اور کیا نہ کرے۔"۔۔۔

  • ظفر صاحب
    پہلا اور تیسرا ماخذ میرے ووٹ کے حقدار ٹھہرے کیونکہ یہی قرین قیاس ہیں۔ ویسے بھی ان دونوں کا وقوع ایک ساتھ ہی ہوسکتا ہے۔

    چھوٹتے ہیں جب چھکے، پسینے آ ہی جاتے ہیں۔

  • فاتح صاحب، بزم میں شرکت کا شکریہ۔ تو کیا ہم یہ سمجھیں کہ آپ ماخذ 1 یعنی چھیئوں حواس کھو بیٹھنا کی جانب جھکاؤ رکھتے ہیں؟

  • ارائیں لفظ کس زبان سے اخﺫ ہوا ہے اور اس کا مصداق کیا ہے?
  • میرے ناقص خیال میں چھکے چھوٹنا،پسینے چھوٹنے سے زیادہ قریب واقع ہوا ہے

  • چھکے چھوٹنا اور چھکے پنجے بھول جانا، یہ محاورے دراصل چوسر بازوں اور جواریوں کی اصطلاحیں ہیں اور چھکے سے مراد چھ ہی ہے جیسا کہ دوسرے محاورے چھکے پنجے بھول جانا سے بھی واضح ہو رہا ہےاور یہ پانسا، پاسا یا پاشا کی چالیں ہیں۔
    منشی چرنجی لال مخزن المحاورات (1886) میں چھکے چھوٹنا سے مراد چھکا ہاتھ سے گرنا ہی لیتے ہیں۔
    جب کوئی تدبیر نہ بن پڑے،اوسان خطا ہو جائیں اور ہوش وحواس جاتے رہیں تو بولتے ہیں۔

  • چھکے چھوٹنا سے بہتر محاورہ ہاتھوں کے طوطے اڑنا ہے

  • چلیں یہی بتا دیں کہ ہاتھوں کے طوطے چھوٹنے سے مراد دنگ رہ جانا کیوں لی جاتی ہے؟

سائن ان یا رجسٹر تبصرہ کرنے کے لئے۔