The way you access our dictionary content is changing.

As part of the evolution of the Oxford Global Languages (OGL) programme, we are now focussing on making our data available for digital applications, which enables a greater reach in delivering and embedding our language data in the daily lives of people and providing more immediate access and better representation for them and their language.

Because of this, we have made the decision to close our dictionary websites.
Our Oxford Urdu living dictionary site closed on 31st March 2020, and this forum closed with it.

We would like to warmly thank everyone for your participation and support throughout these years – we hope that this forum, and the dictionary site, have been useful
You were instrumental in making the Oxford Global Languages initiative a success!

Find out more about what the future holds for OGL:
https://languages.oup.com/oxford-global-languages/

بلا بھی کبھی کتا تھا

September 2018 کو ترمیم کیا میں یہ لفظ کہاں سے آیا؟

لسانیات میں بعض اوقات حیرت انگیز قلابازیوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ اس کی ایک دلچسپ مثال بلّی ہے۔اس پراسرار مگر پرکشش جانور کو انگریزی میں
Cat
کہا جاتا ہے۔ بلکہ یورپ کی دیگر کئی زبانوں میں اس سے ملتے جلتے روپ سامنے آتے ہیں: لاطینی اور بازنطینی یونانی دونوں میں
katta
ہے۔ روسی میں
Kot
تو ولندیزی میں
Kat
اطالوی میں
Gatto
(اشفاق احمد کا افسانہ ’گاتو‘ بلی ہی کے بارے میں ہے)
وغیرہ۔

یہ ساری زبانیں تو انڈو یورپین خاندان سے تعلق رکھتی ہیں، اس لیے یہ کوئی اچنبھے کی بات نہیں ہے۔ اچنبھا تو تب شروع ہوتا ہے جب ہم عربی میں دیکھتے ہیں کہ بلی قطہ کہلاتی ہے، جو ہوبہو کیٹ کا صوتی ہمزاد ہے۔

ایک لمحے کے لیے ذرا بلی جانور کی تاریخ پر بھی ایک نظر دوڑا لیتے ہیں۔ بلی کو سب سے پہلے میسوپوٹیمیا میں پالتو بنایا گیا، اس کے بعد یہ جانور مصر اور پھر دوسری قدیم تہذیبوں تک پھیلا۔ جب جانور گیا تو ساتھ میں اس کا نام بھی گیا۔

میسوپوٹیمیا کی دو قدیم زبانیں اشوری اور استوری ہیں۔ ان دونوں میں بلی کو کاتو کہتے تھے۔

اس لیے ہم یہ مفروضہ قائم کر سکتے ہیں کہ یہیں سے یہ لفظ عربی میں جا کر قطہ ہوا اور یورپ پہنچ کر لاطینی کا کیٹس ہوا اور پھر اس سے ملتی جلتی صوتی شکلوں دھارتا چلا گیا۔

یہ ساری باتیں تو اپنی جگہ لیکن اردو کی ’بلی‘ کہاں سے آ گئی؟
مختصراً یہ کہ سنسکرت میں بلڈالی تھی، اسی سے بلی بن گئی۔ یہ بڑی بورنگ اور عامیانہ بات ہے، لیکن جو چیز دلچسپ اور انوکھی ہے وہ بلی نہیں بلکہ اس کا ایک ازلی حریف اور رقیب جانور ہے۔
کتا!!!۔

آپ نے غور کیا؟ کتا اور بلی کے قدیم نام کاتو میں کس قدر مماثلت ہے؟
کیا یہ ممکن ہے کہ ہمارے ہاں بھی پراچین زمانے میں بلی کو ۔۔۔ ذرا گہری سانس لیجیے ۔۔۔ کتا کہتے تھے لیکن کسی غلطی یا غلط فہمی یا پیار دلار سے لفظ ادھر ادھر ہو گیا اور کتا بلی بن گیا؟

یقین نہیں آ رہا نا؟ لیکن ایک نظر اس امر پر بھی کہ لاطینی میں کتے کے پِلّے کو
Catulus
کہتے ہیں۔

دوسری طرف پروٹو انڈو یوروپین، یعنی انڈویورپین زبانوں کی مہا ماتا میں کتے تو کو خیر
*ḱwṓ
کہا جاتا ہے، لیکن پلے کے لیے وہاں بھی
Kat
ہی ملتا ہے۔

تو اس ساری بحث کا خلاصہ یہ قیاس ہے کہ جیسے ساس بھی کبھی بہو تھی، ویسے بلا بھی کبھی کتا تھا!!!!ا

تبصرے

  • اس نکتے سے واجبی سا تعلق رکھنے والا ایک چٹکلا ذہن میں آتا ہے۔ پشتو میں بلّی یعنی انگریزی کی "کیٹ" کو "پیشو" کہتے ہیں۔ جبکہ تتلی کے لاروا یعنی انگریزی "کیٹر پِلّر" کو "پیشو گئے" نجانے کیوں۔۔ انگریزی اور پشتو میں دونوں اسماء کی اولین آواز کی مماثلت ملاحظہ ہو۔

  • جناب عالی بلی کی تلاش میں آپ کو ما قبل از تاریخ کے برصغیر میں جانا ہڑے گا جہاں ابھی آریوں اور آشوریوں کلدانیوں وغیرہ کی اتنی آوا جاہی نہیں ہوئی تھی،، اس وقت یہاں قدیم ترین زبان تمل اور تیلگو کا بول بالا تھا،،، یہ بلی وہیں سے آئی ہے،، تمل میں چیتے کو پُلی کہتے ہیں،جو کہ بلی کے خاندان کی ایک زرا بڑی بلی ہے، تیلگو میں بلی کو پِلی کہتے ہیں ،، اب اس پ کا ب میں بدلا جانا کوئی ایسے اجھمبے کی بات بھی نہیں،، تو بلی ہماری ہے اصلی اور خالص ہماری اس کا کسی کتا قطہ یا کیٹ سے کوئی لینا دینا نہیں ہے۔۔۔

  • حضور والا، بلی کا تو مذکور نہیں، یہاں پر بحث کتے سے ہو رہی ہے۔ نہ ہی کوئی ایسا دعویٰ کیا گیا ہے کہ لفظ بلی کا لفظ کتے سے کسی قسم کا کوئی تعلق ہے۔

سائن ان یا رجسٹر تبصرہ کرنے کے لئے۔