The way you access our dictionary content is changing.

As part of the evolution of the Oxford Global Languages (OGL) programme, we are now focussing on making our data available for digital applications, which enables a greater reach in delivering and embedding our language data in the daily lives of people and providing more immediate access and better representation for them and their language.

Because of this, we have made the decision to close our dictionary websites.
Our Oxford Urdu living dictionary site closed on 31st March 2020, and this forum closed with it.

We would like to warmly thank everyone for your participation and support throughout these years – we hope that this forum, and the dictionary site, have been useful
You were instrumental in making the Oxford Global Languages initiative a success!

Find out more about what the future holds for OGL:
https://languages.oup.com/oxford-global-languages/

گھاٹن

منٹو کے مشہور افسانے بو میں ایک کردار ہے جسے منٹو نے ’گھاٹن‘ کہہ کر مخاطب کیا ہے۔ اب سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ گھاٹن کا کیا مطلب ہے؟

لغت میں گھاٹن کا مطلب مندرجہ ذیل درج ہے

پہاڑی علاقے میں رہنے والی عورت

لیکن اگر گھاٹن گھاٹ سے نکلا ہے تو گھاٹ تو اس جگہ کو کہتے ہیں جہاں کشتیاں آ کر رکتی ہیں

دریا یا تالاب وغیرہ کے کنارے پر بنی ہوئی سیڑھیاں، جہاں پانی بھرتے اور نہاتے دھوتے ہیں

پانی بھرنے یا نہانے دھونے کی جگہ ، وہ سیڑھیوں دار مقام جہاں لوگ نہاتے ہیں

ساحل پر وہ مقام جہاں سے دریا کو پار کریں ، وہ مقام جہاں سے کشتی پر سوار ہوں یا اُتریں

تو پھر گھاٹن پہاڑی علاقے سے تعلق رکھنے والی عورت کیسے ہو گیا؟

لیکن اسی لغت میں اگر نیچے جا کر دیکھا جائے تو معلوم ہو گا کہ گھاٹ کا صرف یہی مطلب نہیں، بلکہ یہی لفظ اور معنی بھی دیتا ہے

تلوار کا خم ، خمِ شمشیر ، باڑھ سے اوپر کا حصہ
مقام، منزل، راستہ، سمت، رخ

انگیا کے سامنے کا مثلث نما کُھلا ہوا حصّہ ، انگیا کا گریبان
تراش خراش، وضع قطع، روپ، صورت، ڈول، ڈھنگ ، انداز ، طرز،.
راہ، راستہ

ہندو: دُلہن کا لہنگا

شکاری: شیر یا کسی اور جنگی جانور کا رات کے وقت شکار کرنے کے لیے درخت کے اوپر گھات میں بیٹھنے کی بنائی ہوئی جگہ، مالا

اسی کے ساتھ ایک اور معنی بھی درج ہیں

دشوارگزار پہاڑی راستہ، گھاٹی، درۂ کوہ، پہاڑ
پہاڑ ، پربت

اور یہی وہ معنی ہیں جس سے گھاٹن بمعنی پہاڑی عورت نکلا ہے۔

گھاٹ بمعنی پہاڑی درہ کا اسمِ تصغیر اردو میں زیادہ مستعمل ہے یعنی گھاٹی۔

پس معلوم ہوا کہ گھاٹن پہاڑی عورت کو کہتے ہیں، ایسے ہی جیسے تحقیر کی غرض سے پہاڑوں کے باسیوں کو بعض علاقوں میں پہاڑیا کہا جاتا ہے۔

تبصرے

  • کیا کہتے ہیں دوست بیچ اس مسئلے کے؟ کیا وہ اس تعبیر سے مطمئن ہیں؟

  • مصنف کے ایجاد کئے گئے نئے لفظ کو سمجھنے کے لئے اس کے دور کا احاطہ کرنا لازمی ہے

  • جب یہ لفظ پہلے سے لغت میں موجود ہے تو پھر مصنف نے کیسے ایجاد کیا؟

  • پشتو میں چٹان کے لیے لفظ "گٹ" مروج ہے اور براہوئی میں پتھریلے ٹیلے کو کہتے ہیں۔ چنانچہ بلوچستان کے ضلع خضدار میں زہری گٹ اور بلبل گٹ ہیں جبکہ ضلع زیارت میں لیل گٹ۔

  • ویسے میں نےمنٹو کا یہ افسانہ تو نہین پڑھا تاہم آپ کے پیش کردہ لفظ اور بحث پر غور کے بعد میرا قیاس ہے کہ یہ پنجابی لفظ گہٹ(کم) اورگہاٹا،گاہٹا(نقصان) سے نکلا ہے اگر افسانے میں کردارکو ضرر رساں یا نقصان دہ یا کسی بھی منفی پہلو پر پیش کیا گیاہے تو میرا خیال ہے کہ پنجابی سے لیاگیاہے ویسے پشتو لفظ اور پنجابی لفظ کو ایک دوسرے کا مترادف کہہ لیں تب بھی مضائقہ نہیں۔

  • جیسا کہ اوپر عرض کیا گیا، لفظ گھاٹن منٹو نے ایجاد نہیں کیا، وہ پہلے سے مارکیٹ میں پہاڑی عورتوں کے لیے موجود تھا۔ منٹو نے اسے صرف افسانے میں استعمال کیا ہے، اس لیے یہ نہیں کہا جا سکتا کہ منٹو نے اس لفظ کو کوئی نئے معنی عطا کیے ہیں۔

سائن ان یا رجسٹر تبصرہ کرنے کے لئے۔